39

چین کو پاکستان کی ضرورت کیوں ہے کچھ اہم ترین وجوہات

چین کو پاکستان کی ضرورت کیوں ہے کچھ اہم ترین باتیں جن کی وجہ سے چین کو پاکستان کی ضرورت ہے۔
پہلی بات چین اپنی 80فیصد تیل کی تجارت آبنائے ملاکا سے کرتا ہے۔ آبنائے ملاکا سے چین تک کا صحیح راستہ ان کو دس ہزار میل کے قریب پڑتا ہے جبکہ پاکستان کی گوادر پورٹ سے اگر تجارت کرے تو یہ راستہ اسے دو ہزار سے ساڑھے تین ہزار میل تک آتا ہے۔ اس طرح اگر چین صرف اپنا آدھا تیل پاکستان کے راستے لے کرجائے تو اسے سالانہ دو ارب ڈالر کا منافع ہوگا لیکن چین جیسے ملک کے لیے صرف دو ارب ڈالر ایک اہم چیز نہیں ہے۔ دوسری اہم وجہ یہ ہے کہ آبنائے ملاکا کے ذریعے آنے والا تیل اور چین کی تجارت ہمیشہ خطرے سے دوچار رہتی ہے۔ جین کو مسلسل اور بڑی مقدار میں تیل اور گیس چاہیے لیکن آبنائے ملاکا کا راستہ ہر وقت جنگ کے خطرہ میں رہتا ہے چونکہ یہاں موجود جاپان کوریا تائیوان فلپائن اور ویتنام۔ چین کے لیے درد سر ہیں کیونکہ انہیں کا بہانہ بنا کر امریکی فوج کا سب سے بڑا چنگی بیڑا یہاں موجود ہے۔


تائیوان سعید وہ جگہ ہے جہاں امریکی فوج نے مضبوط قدم جماہے ہوئے ہیں اس جگہ ہر وقت جنگ کے سائے منڈلاتے رہتے ہیں لیکن اگر حالات زیادہ کشیدہ ہو گئے تو امریکہ اور سارے ممالک ملکر چین کا راستہ بند کر سکتے ہیں۔
اور چین اتنا بڑا بلاک برداشت نہیں کر سکتا اس کے مقابلے میں پاکستان کا راستہ مختصر اور محفوظ ہے۔
ایک اور اہم وجہ چین کا مشرقی علاقہ ہے ایک طرف چین کا مشرقی علاقہ ہے جو کہ ترقی یافتہ ہے سڑکوں کا ایک بہت بڑا جال بچھا ہوا ہے اور وہیں سے تجارت ہو رہی ہے۔لیکن چین نہیں چاہتا کہ آدھا چین ترقی کرے اور باقی کا حصہ غربت میں رہے۔اس طرح چین کبھی ترقی نہیں کر پائے گا اس کے لئے چین میں مغربی ریاستوں اور مغربی شہروں کی ترقی کے لیے ایک پروگرام بنایا ہے۔جس کے ذریعے چائنا اپنے مغربی ریاستوں میں سڑکوں کا جال بچھائے گا اور وہاں مصنوات بنانا شروع کرے گا ۔اس کے علاوہ چین ایک بہت بڑی شاہرہ، شاہرا ریشم بنا رہا ہے۔یہ شہر آج چین کو قازقستان ازبکستان ترکمانستان ایران اور ترکی سے ہوتی ہوئی یورپ کے ساتھ ملائے گی۔اس طرح چین اپنی مصنوعات اس شاہراہ کے ذریعے اے یورپ کے ممالک میں پہنچائے گا۔ اور دوسرا راستہ ہے سی پیک جو کہ پاکستان سے ہوتا ہوا عرب دنیا اور افریقہ سے تجارت کرے گا گا یہ راستہ بہت ہی مختصر اور محفوظ ہوگا۔اور اس کے لیے چین کو کو پاکستان کی ضرورت ہے۔


لیکن کیا پاکستان کو چین پر اتنا بھروسہ کرنا چاہیے۔ کیا پاکستان کے پاس چین کو انکار کرنے کا آپشن ہے۔ آپ اس بارے میں کیا سوچتے ہیں کہ چین کی پیش کی گئی ہر آفر کو کو ہمیں ایک دم قبول کرلینا چاہیے چاہئے یا کچھ سوچ سمجھ کر اپنے مفاد میں فیصلہ لینا چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں