how netflix earns money 107

نیٹ فَلکس کیسے یوٹیوب سے بھی زیادہ پیسے کماتا ہے، مکمل بزنس ماڈل

ایک وقت تھا جب لوگ کسی فلم یا ڈرامہ کو دیکھنے کے لئے لمبے وقت تک انتظار کرتے تھے۔ گھنٹوں ٹی وی کے آگے سب گھر والوں کا بیٹھ جانا اور اگر ڈرامہ یا فلم کے دوران بجلی چلی جائےپھر تو صفِ ماتم بچھ جایا کرتا تھا۔وقت نے کروٹ لی اور آج ہم اُس دور میں آچکے ہیں جہاں پر ٹی وی کا رُجہان ختم ہوتا جارہا ہے۔ لوگوں کو جب بھی اپنا مَن پسند دیکھنا ہوتا ہے وہ گوگل یا پھر یوٹیوب پر سرچ کر کے جب دل چاہے دیکھ لیتے ہیں۔

نیٹ فِلکس کیا ہے؟

نیٹ فِلکس بھی اُن پلیٹ فارمز میں آتا ہے جہاں پر لوگ اپنی پسند اور فارغ وقت کے حساب سے فلمیں اور ویب سیریز دیکھتے ہیں۔انہوں نے 1997 میں کمپنی کی بنیاد رکھی لیکن اُس وقت یہ سی ڈیز میں فلمیں اور ڈرامے بیچا کرتے تھےاور پیسہ کمایا کرتے تھے۔ وقت کے ساتھ ساتھ انہیں محسوس ہوا کہ لوگ اب سی ڈیز کا استعمال ختم کرتے جا رہے ہیں۔ اپنی بقا اور پیسے کو مزید بڑھانے کے لئے اِنہوں نے نیا بزنس ماڈل اپنایا جہاں پر آنلائن لوگوں کو فلمیں ڈرامے دیکھائے جائیں اور مہینے کے حساب سے پیسہ لے لیا جائے۔سی ڈیز بیچ کر ایک وقت میں بس پیسہ کمایا جا سکتا تھا لیکن اِس نئے آنلائن ماڈل سے ہر مہینے پیسہ چھاپا جا سکتا تھا۔

اِن کا پیسہ کمانے کا ذریعہ مکمل طور پر سبسکرپشن پر ہے، مطلب جو لوگ اِن کے پیکجز کو خریدتے ہیں بس وہیں سے انہیں پیسہ آتا ہے۔بظاہر دیکھنے میں لگتا ہے کہ نیٹ فِلکس کچھ خاص نہیں کماتا ہو گا لیکن اگر آپ حساب لگائیں تو یہ تخمینہ یوٹیوب سے بھی اوپر دیکھنے میں آپ کو مِل سکتا ہے۔

نیٹ فِلکس ویڈیو آن ڈیمانڈ پلیٹ فارم ہے جہاں پر آڈئینس اپنی مَن مطابق شوز دیکھ سکتے ہیں۔نیٹ فِلکس پر تین طرح کا مواد ہمیں دیکھنے میں ملتا ہے۔لائسنس سیکنڈ ون، لائسنس اوریجنل اور سیلف پروڈیوسڈ اوریجنل۔

لائسنس سیکنڈ ون میں پہلے سے ریلیزڈ فلموں کے لائسنس خرید کر اُنہیں اپنے یوزرز کو دیکھایا۔ کیوں کہ پہلے سے ریلیزڈ فلموں کے لائسنس اتنے مہنگے نہیں ہوتے اور مشہور فلموں کو کئی بار لوگ بار بار دیکھنا بھی پسند کرتے ہیں۔ کسی بھی فلم کے لائسنس کی قیمت اُس فلم کی پاپولیریٹی اور کتنے وقت کے لئے لائسنس کر رہے ہیں، پر انحصار کرتی ہے۔

لائسنس اوریجنل میں فلموں کے ڈسٹری بیوشن رائٹس خرید لئے جاتے ہیں اور انہیں نیٹ فِلکس پر دیکھایا جاتا ہے۔ ڈسٹری بیوشن رائٹس کسی بھی فلم کے کیا ہوتے ہیں اور کیسے اُس سے پیسہ کمایا جاتا ہے ،اُس پر پہلے سے انگلی پوائنٹ پر آپ کو آرٹیکل پڑہنے کو مِل جائے گا۔ لائسنس اوریجنل ویسے ہی ہے جیسے کسی فلم کو سینما میں نہ ریلیز کر کے نیٹ فِلکس پر ریلیز کر دیا جائے۔ مثال کے طور پر کوئی کمپنی ایک فلم کو بناتی ہے ۔اُس فلم کو بننے میں 10کروڑ روپے لگے۔ نیٹ فِلکس اُس فلم کے رائٹس 20کروڑ میں خرید لیتی ہے اور اپنے پلیٹ فارم پر ریلیز کر دیتی ہے۔اب اگر اُس فلم کی وجہ سے 5لاکھ لوگوں نے بھی سبسکرپشن خرید لی تو نیٹ فِلکس کو سیدھا 40کروڑ سے اوپر کا فائدہ ہو جائے گا۔

سیلف اوریجنل میں نیٹ فِلکس فلم یا پھر ویب سیریز کو خود ہی بناتا ہے اور اپلوڈ کرتا ہے جیسا کہ ایک بہت مشہور سیریز سیکرڈ گیمز1 اور 2۔ اِس سیریز کے دوسرے پارٹ پر تقریبا 100کروڑ روپے نیٹ فلکس نے لگائے تھے۔ 100کروڑ میں 5 سے 10فلمیں بن جاتیں ہیں لیکن اِس ایک سیریز پر پیسہ لگا کر بنایا گیا اور کئی گنا زیادہ کمایا گیا۔

نیٹ فِلکس جو پیسہ کماتا ہے اُس کا زیادہ حصہ اور اچھے فلم یا سیریز کو بنانے میں لگا دیتا ہے تا کہ نئے یوزرز کو لایا جا سکے اور پُرانے یوزرز کو انگیج رکھا جا سکے۔اِس کے مالک کا کہنا تھا کہ 2018 تک نیٹ فِلکس 700 سیریز کو بنائے گا اور اُس میں 16 سے 17ہزار کروڑ روپے پاکستانی کرنسی کے مطابق لگائے گا۔تو آپ سوچ سکتے ہیں کہ اگر اتنا پیسہ لگایا جا رہا ہے تو کتنا پیسہ کمایا جا رہا ہو گا۔

نیٹ فِلکس اور یوٹیوب میں فرق کیسے؟

کچھ لوگ یوٹیوب کو نیٹ فلکس کے ساتھ مانپتے ہیں جبکہ یوٹیوب کا نیٹ فلکس کے ساتھ کوئی جوڑ نہیں ہے۔ یوٹیوب ایک ویڈیو شئیرنگ پلیٹ فارم ہے جہاں پر کوئی بھی ویڈیو ڈال سکتا ہے اور کما سکتا ہے ، لیکن نیٹ فلکس پر ہر ایرہ غیرہ کچھ نہیں اپلوڈ کر سکتا جب تک کہ آپ کسی فلم کمپنی کے مالک نہ ہوں۔ یوٹیوب ایک فری پلیٹ فارم ہے ، جبکہ نیٹ فلکس کے پاکستان میں مہینے کے پیکجز 450 سے لے کر 1500 تک کے ہیں۔یوٹیوب کے یوزرز ہر مہینے کے تقریبا 34بلین ہیں جبکہ دوسری طرف نیٹ فلکس کے تقریبا 18کروڑ ہیں۔ بے شک یوٹیوب کو استعما ل کرنے والوں کی تعداد کئی گناہ زیادہ ہے لیکن پھر بھی نیٹ فِلکس اِس سے کئی گناہ زیادہ کماتا ہے۔کیونکہ یوٹیوب اشتہارات سے پیسہ کماتا ہے اور 60فیصد حصہ ویڈیو بنانے والے کو دے دیتا ہے۔

نیٹ فِلکس پر پیسے کیوں ضائع کریں؟

کئی لوگو ں کا سوال ہوتا ہے کہ جب فلمیں اور سیریز گوگل پر یا کچھ یوٹیوب پر مِل جاتیں ہیں تو نیٹ فِلکس خریدنے کا کیا فائدہ؟ نیٹ فِلکس صرف بزنس کلاس لوگوں کو ٹارگٹ کرتا ہے جو اپنے فارغ وقت میں جب چاہیں ایچ ڈی کوالٹی میں ِبنا کسی مسلے کے فلمیں ڈرامے انجوائے کر سکیں۔ اگر کسی سٹوڈنٹ یا پھر مڈل کلاس لوگوں کو دیکھا جائے تو وہ کئی کئی گھنٹے صرف کسی فلم یا سیریز کو ڈھونڈنے میں اور ڈاؤنلوڈ کرنے میں لگا دیتے ہیں۔ اور اگر آنلائن تگ ودود کے بعد دیکھنا شروع بھی کر دیں تو اشتہارات کا مسلہ، ویڈیو کی کوالٹی کا مسلہ، بار بار ویڈیو کے رُک جانے کا مسلہ آتا رہتا ہے جس کو مڈل کلاس لوگ برداشت کر لیتے ہیں۔ لیکن وہیں پر بزنس کلاس لوگوں کا وقت بہت قیمتی ہوتا ہے یا پھر انہیں ویڈیو کوالٹی پر، اشتہارات کے بار بار آجانے پر سمجھوتہ نہیں کرنا ہوتا۔

نیٹ فِلکس کن لوگوں کے لئے؟

نیٹ فِلکس پر آپ کو بہت سی فلمز اور سیریز ہندی ڈبڈ نہیں ملیں گی۔ اگر آپ ہندی فلمیں سیریز دیکھنے کے عادی ہیں تو خریدنے کے بعد آپ کو شاید ناامیدی کا سامنا کرنا پڑے۔ کئی مشہور سیریز اور فلمیں بھی ادھر ہندی ڈبڈ نہیں ملیں گی جو آنلائن گوگل پر آسانی سے مل جاتیں ہیں لیکن ایک بار خریدنے کے بعد نیٹ فلکس کے ویڈیو پلئیر کی سپیڈ ، ایچ ڈی کوالٹی اور ہر ویڈیو کے ساتھ مختلف زبانوں کے سبٹائٹلز آپ کو اِ س کا گرویدہ کر دیں گے۔

مختلف ممالک میں نیٹ فِلکس کا استعمال

امریکہ میں 60فیصد سے زیادہ کی تعداد نیٹ فلکس کو استعمال کرتی ہے اور باقی ممالک میں بھی اِس کی تعداد آہستہ آہستہ بڑہتی جا رہی ہے۔ ایک سروے کے مطابق یوٹیوب سے زیادہ لوگ نیٹ فلکس پر اپنا وقت گزارتے ہیں۔ اپنے ذاتی تجربے کے مطابق مجھے نیٹ فلکس کے ویڈیو کوالٹی یوٹیوب کی نسبت سلو انٹرنیٹ سپیڈ میں اچھی لگی۔ کچھ ممالک میں 30دن کا فری ٹرائل دیا جاتا ہے لیکن اِس میں آپ کو اپنا کریڈٹ کارڈ کو لگانا پڑتا ہے اور مہینے کی فیس ادا کرنی ہوتی ہے اور اُس فیس میں ایک مہینے فری استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اگر آپ کو اِن کی سروس اچھی نہیں لگتی تو آپ جب چاہیں ممبر شپ ختم کر سکتے ہیں اور آپ کی ساری فیس آپ کو واپس کر دی جاتی ہے۔ پاکستان میں کچھ وقت پہلے اِن کا 30دن کا فری ٹرائل سسٹم ختم کر دیا گیا تھا۔

امید ہے آپ کو یہ آرٹیکل پسند آیا ہو گا ۔ پسند نا پسند کا اظہار نیچے ووٹ باکس میں کریں۔ انگلی پوائنٹ کو سبسکرائب اور فیس بک پیج کو لائک کر کے ہر نئے آرٹیکل کا نوٹیفیکیشن اپنے موبائل یا لیپ ٹاپ پر حاصل کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں