how to shoot sex scenes in shows 226

کیا فلم یا ویب سیریز میں دیکھائے گئے سیکس سینز اصلی ہوتے ہیں

زمانے کے ساتھ چلتے ہوئے ہم نے ٹی وی کو ترک کیا اور یوٹیوب پر چل پڑے ، جب دل کیا یا جب وقت ملااپنی مرضی کا ڈرامہ یا فلم دیکھ لی۔یوٹیوب پر ہمیں ہر طرح کی فلم یا شو دیکھنے کو نہیں ملتا۔ اگر کوئی فلم یا سیریز ہمیں دیکھنی ہے اور وہ یوٹیوب پر نہ ہو تو ہم 2سے 3گھنٹے لگا کر اُسےگوگل پر سرچ کرتے ہیں اور ڈاؤنلوڈ کر کے دیکھتے ہیں۔وقت بدل گیا ہے اوراب وہ لوگ جن کو اپنا وقت عزیز ہوتا ہے وہ نیٹ فلکس جیسی سروسز خرید لیتے ہیں تا کہ ڈھونڈنے میں وقت برباد نہ ہو۔
جو لوگ نیٹ فِلکس یا پھر اِس جیسی آنلائن آن ڈیمانڈ سروسز کا استعمال کرتے ہیں وہ جانتے ہیں کہ اُن پر موجود فلموں یا بالخصوص سیریز میں انتہا درجے کا سیکس دیکھایا جاتا ہے۔کئی بار دیکھ کر ایسے لگتا ہے جیسے ڈائریکٹر کے پاس صرف سیکس سینز تھے اور اُس نے رائٹر کو کہا کہ اس میں فلم یا شو کی کہانی ڈال دو۔لیکن یہاں سوال اٹھتا ہے کہ کیا اُس میں دیکھائے جانے والے سیکس سینز اصل میں کئے جا رہے ہوتے ہیں یا نہیں، اگر نہیں تو سب کچھ اصل کیسے دِکھ رہا ہوتا ہے۔

سینما کی فلموں میں سیکس سینز کیوں نہیں؟

جو فلمیں ہم سینما میں دیکھتے ہیں اُس میں ہمیں بہت کم نیوڈ سین نظر آتے ہیں۔ نیوڈ کو چھوڑیں کِسنگ سینز بھی 2 سے 3ہوتے ہیں۔ایسا اِس لئے نہیں ہوتا کہ اِن کے ڈائریکٹر شریف ہوتے ہیں بلکہ جب فلم بن کر تیار ہو جاتی ہے تو سینما میں لگنے سے پہلےسینسر بورڈ ڈیپارٹمنٹ سے اپروو کروائی جاتی ہے۔ یہ بورڈ اگر کوئی گڑ بڑ سین دیکھتا ہے تو اُسے کٹوا دیتا ہے اور پوری کانٹ چھانٹ کے بعد سینما میں ریلیز کے لئے آتی ہے۔لیکن آنلائن پلیٹ فارمز پر کوئی سینسر بورڈ نہیں ہوتا، جیسے ڈائریکٹر چاہیں شوٹ کروا کر ریلیز کر سکتے ہیں۔

کیا سیکس سینز دیکھانا لازمی ہوتا ہے؟

بہت سے لوگ پوچھتے ہیں کیا سیکس سینز دیکھانا ضروری ہے، بس مرد عورت کو بیڈ پر دیکھا دیا جائے لوگ خود سمجھ جائیں گے کہ انٹرکورس ہو چکا ہے،اس کے جواب میں اگلے کہتے ہیں اگر اِسی فارمولے کو اپنایا جائے تو چوری والی فلموں میں ڈائریکٹر بس بلڈنگ پر چڑھتا ہوا لوگوں کو دکھا دے اور لوگ سمجھ جائیں کہ چوری ہو چکی ہے،کسی انسان کو زمین پر لٹا دیا جائے لوگ سمجھ جائیں گے اِسے کسی نے مار دیا ہے۔ یہ لاجِک کسی وقت سہی اور کسی وقت بہت بے تُکی معلوم ہوتی ہے لیکن کیا کر سکتے ہیں لاجِک دینے والوں نے دے دی۔

سیکس سینز اصلی یا نقلی؟

نیٹ فِلکس جیسے پلیٹ فارم پر جتنے بھی شوز یا فلموں میں سیکس سین دیکھائے جاتے ہیں اُن میں زیادہ تر اصلی نہیں ہوتے، جب ہم بات زیادہ تر کی کر رہے ہیں تو اِس کا مطلب کے کچھ فلموں میں سین کو اصلی دیکھانے کے لئے سیکس اصل میں کروایا جاتا ہے۔ گیم آف تھرون جس کو سیریز کا بادشاہ کہا جاتا ہے اُس میں کچھ ایکٹرز نے اصل میں سیکس پرفارم کیا تھا۔ باقی مین ایکٹرز سے جب اِس طرح کا سین کروایا جاتا ہے تو یا تو باڈی ڈبل(مطلب کوئی دوسرااسٹنٹ ایکٹر) اُس ایکٹر کی جگہ ہوتا ہے یا پھروہ ایکٹر اپنے نازک اعضاء پر کُشن وغیرہ رکھ کر ڈھانپ لیتے ہیں تا کہ سین پرفارم کرتے ہوئے مشکلات کا سامنا نہ ہو۔

ننگے ایکٹر اصلی یا نقلی؟

فلموں یا شوز میں جو ننگے ایکٹر دیکھائے جاتے ہیں وہ زیادہ تر اصل میں ننگے ہوتے ہیں مطلب وہ سارے کپڑے اتارتے ہیں۔ کوئی بہت بڑا ایکٹر ہو جس کا دل نہ ہو اُس کے جسم پر سِکن جیسا لباس پہنا دیا جاتا ہے جو بلکل اصلی لگتا ہے۔جیسا کہ گیم آف تھرون کی ہیروئن ایملیا، شروعات میں انہوں نے سینز بلکل کپڑے اتار کر شوٹ کروائے لیکن آہستہ آہستہ جب شو ہٹ ہوا اور انہیں شہرت ملی تو انہوں نے ایسے سین کرنے سے انکار کر دیا تھا اور انہیں شوٹ نہیں کیا گیا تھا۔
بیٹ مین کے مشہور اداکار بین افلیکٹ کی ایک فلم گون گرل میں انہیں ایک سین کو شوٹ کرنے کے لئے بلکل ننگا ہونا پڑا۔ ایسے سینز کو شوٹ کرنے میں سب سے بڑا کمال ڈائریکٹر اور ایڈیٹر کا ہوتا ہے۔ کیمراز ایسے اینگل پر لگائے جاتے ہیں کہ بعداز ایڈیٹنگ وہ بلکل اصلی لگتے ہیں۔کئی بار سیکس سین میں مرد عورت کو پیچھے سے دیکھایا جاتا ہے جس میں زیادہ تر ایکٹرز اصلی نہیں ہوتے بلکہ اِن کے باڈی ڈبل استعمال ہوئےہوتے ہیں۔

آخری بات

اِس آرٹیکل کی سمری کی جائے تو آپ یہ سمجھ سکتے ہیں کہ 90فیصد شوز میں سارا کمال ڈائریکٹر اور ایڈیٹر کا ہوتا ہے جو نقلی سین کو بلکل اصلی محسوس کروا دیتے ہیں۔انٹرکورس کرنا فلموں میں اتنا آسان نہیں ہوتا کیونکہ جس سین میں ہم صرف 2لوگوں کو دیکھ رہے ہوتے ہیں اصل میں وہاں 30 سے 40لوگ موجود ہوتے ہیں۔ لیکن اگر ڈائریکڑ کے اوپر بلکل اصلی کا بھوت سوار ہو تو ایکٹرز کو وہ سب کرنا پڑتا ہے۔جن فلموں یا شوز کے شروع میں آپ کو 18پلس کا سرٹیفیکیٹ نظر آئے آپ سمجھ لیں کہ اِس مں کچھ سیکس یا نیوڈ سینز اصلی ہیں اور اگر شروع میں کچھ نہ دکھایا جائے تو سب کے سب نقلی سینز شوٹ کیے گئے ہیں۔

امید ہے آپ کو یہ آرٹیکل پسند آیا ہو گا اور کچھ نیا جاننے کا ملا ہو گا۔اِسی طرح کے آڑٹیکل پڑھنے کے لئے انگلی پوائنٹ کو سبسکرائب اور فیس بک پیج کو لائک کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں